امریکی وزیردفاع کا افغانستان کا غیراعلانیہ دورہ

کابل: امریکی وزیر دفاع جیمس میٹس اعلیٰ فوجی افسران کے ہمراہ غیر اعلانیہ دورے پر افغانستان پہنچ گئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کے وزیر دفاع جیمس میٹس غیر اعلانیہ دورے پر آج کابل پہنچ گئے ہیں جہاں وہ افغان صدر اشرف غنی سمیت اعلیٰ افغان حکام سے ملاقات کریں گے اور امریکی فوج کے دستوں سے اہم خطاب کریں گے۔ علاوہ ازیں افغان جنگ میں ہلاک ہونے والے امریکی فوجیوں کی یاد میں منعقد کردہ تقریب میں بھی شرکت کریں گے۔

امریکی وزیر دفاع جیمس میٹس کے اچانک دورہ افغانستان میں امریکی بحریہ کے سربراہ جنرل جوزف ڈنفورڈ، چیئرمین جوائنٹ چیف آف اسٹاف بھی ہمراہ ہیں۔ تینوں اعلیٰ امریکی حکام نے کابل پہنچتے ہی افغانستان میں نیٹو کے نئے سربراہ جنرل اسکاٹ ملر سے ملاقات کی۔

امریکی وزیر دفاع کی نیٹو کے نئے سربراہ کے ساتھ ملاقات میں طالبان سے امن مذاکرات اور خطے کے امن کو لاحق خطرات پر تبادلہ خیال کیا۔ قیام امن اور استحکام کے لیے اہم تجاویز پر مشاورت بھی کی گئی۔

غیر اعلانیہ دورہ نیٹو کے نئے سربراہ کی تعیناتی کے فوراً بعد کیا گیا ہے جب کہ گزشتہ ماہ قطر میں امریکی وزارت خارجہ کے حکام کی طالبان نمائندوں سے ملاقات بھی ہوئی تھی جس کے بعد امریکی وزیر دفاع جیمس میٹس میڈیا سے گفتگو کے دوران امن مذاکرات کی کامیابی کے لیے کافی پُرامید نظر آرہے تھے۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر دفاع جیمس میٹس کا افغانستان کا رواں ماہ یہ دوسرا دورہ ہے۔ یہ دورہ افغانستان میں جمہوری عمل کے تسلسل اور طالبان سے امن مذاکرات کے لیے اہمیت رکھتا ہے۔