ملک میں بارشوں کے بعد پانی کے ذخائر میں بہتری

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور راولپنڈی میں حالیہ بارشوں کے بعد جڑواں شہروں میں پانی کے ذخائر بھر گئے اور جھیل میں پانی کی سطح ایک ہزار 7 سو 52 فٹ کو چھونے کے بعد راول ڈیم کی آبی گزرگاہ (اسپل ویز) کھول دی گئی۔

جڑواں شہروں میں بارش کے بعد پانی کی صورتحال بہتر ہے اور آبی ذخائر بھی بھر چکے ہیں۔

اس حوال سے ایک تنظیم کے عہدیدار نے ایک نجی اخبار کو بتایا کہ 2 ہفتوں میں یہ تیسرا موقع ہے کہ ڈیم کی آبی گزرگاہ کو کھولا گیا ہے اور اس کو کھولنے سے قبل 30 منٹ کے لیے سائرن بھی بجایا گیا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ سائرن اس لیے بجایا گیا تھا تاکہ کورنگ نالہ کے اطراف رہنے والے، ماہی گیر اور تیراکی کرنے والے افراد کو خبردار کیا جاسکے کیونکہ جھیل سے پانی چھوڑنے کے موقع پر یہ ان افراد کے لیے خطرے کا باعث بن سکتا ہے۔

دوسری جانب خانپور اور سملے میں صورتحال اطمینان بخش ہے اور دونوں ڈیمز میں پانی سطح میں اضافہ ہورہا ہے جس کے باعث آنے والے دنوں میں مزید بارشوں سے صورتحال مزید بہتر ہوجائے گی۔

واٹر اینڈ سینیٹیشن ایجنسی (واسا) کے ایک عہدیدار کا کہنا تھا کہ شہر اور کنٹونمنٹس کے ٹیوب ویلز میں بھی پانی بھر گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ بارشوں کے بعد زمین کی پانی کی سطح بہتر ہونے سے کام کرنے والے ٹیوب ویلز کی صورتحال اطمینان بخش ہے۔

واسا کے منیجنگ ڈائریکٹر راجا شوکت محمود نے ڈان کو بتایا کہ مون سون کے اسپیل سے خان پور، سملے اور راول ڈیمز میں پانی کی سطح میں اضافہ ہوا اور یہ راولپنڈی اور اسلام آباد کو آئندہ 12 مہینوں کے کے لیے پانی کی فراہمی کے لیے کافی ہے۔