پشاور خودکش دھماکے کے شہداء کی تدفین

پشاور: گزشتہ روز عوامی نیشنل پارٹی کی کارنر میٹنگ کے دوران ہونےوالے خودکش حملے میں شہید ہونےوالے 10 افراد کی اجتماعی نماز جنازہ اداکردی گئی ہے جب کہ دہشتگردی کے واقعے کے بعد شہر کی فضا سوگوار ہے۔

گزشتہ روز الیکشن کے سلسلے میں عوامی نیشنل پارٹی کی کارنر میٹنگ کے دوران خودکش دھماکا ہواتھا جس میں پی کے 78 سے اے این پی کے امیدوار بیرسٹر ہارون بلور سمیت 20 افراد شہید ہوگئے تھے۔ دھماکے میں شہید ہونےوالے 10 افراد کی اجتماعی نماز جنازہ رحمان بابا قبرستان عیسیٰ خیل جنازہ گاہ میں اداکردی گئی۔

ہارون بلور کی نماز جنازہ ادا کردی گئی
دوسری جانب عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما ہارون بلور کی نماز جنازہ وزیر باغ میں ادا کردی گئی ہے، نماز جنازہ کے موقع پر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے اور خصوصی سیکیورٹی پلان تشکیل دیا گیا۔ بلور ہاؤس سے جنازہ گاہ تک سیکیورٹی کے 3 حصار قائم کئے گئے تھے جب کہ راستے میں تمام عمارات پر ماہر نشانہ باز تعینات تھے۔

جنازہ گاہ اور راستے میں پولیس فورس کی مختلف یونٹس کے 500 جوان تعینات تھے۔ جنازہ گاہ میں داخل ہونے والے تمام دروازوں پر واک تھرو گیٹ نصب تھے جب کہ شرکا کی تلاشی لی جارہی تھی۔ اس کے علاوہ نماز جنازہ کے دوران ڈرون کیمروں کے ذریعے فضائی نگرانی بھی کی گئی۔

دہشتگردوں کا نشانہ بننے والے بشیر بلور کے سیاسی وارث ہارون بلور کی بھی دہشتگردوں کے ہاتھوں شہادت پر پشاور کی فضا سوگوار ہے۔ شہر میں اہم کاروباری مراکز اور بازار بند ہیں جب کہ سیاسی سرگرمیاں بھی معطل ہوگئی ہیں۔