نگراں وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے عہدے کا حلف اٹھالیا

اسلام آباد: سابق چیف جسٹس ناصر الملک نے نگراں وزیراعظم کے عہدے کا حلف اٹھالیا ہے۔

نگراں وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے اپنے عہدے کا حلف اٹھالیا ہے، حلف برداری کی تقریب ایوان صدر میں ہوئی جس میں صدر ممنون حسین نے ناصر الملک سے عہدے کا حلف لیا۔ حلف برداری کی تقریب میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزرا، ارکان پارلیمنٹ، چاروں گورنرز، سفارتکاروں، اٹارنی جنرل، انجینئر امیر مقام، ناصر جنجوعہ، کشمالہ طارق اور وفاقی سیکرٹریوں نے شرکت کی جب کہ اپوزیشن جماعتوں کا کوئی رہنما شریک نہیں ہوا۔

نگراں وزیر اعظم ناصر الملک وزیراعظم ہاوس پہنچے تو انہیں گارڈ آف آنر پیش کیا گیا، قومی ترانہ بجایا گیا اور مسلح افواج کے دستے نے سلامی دی۔ اس موقع پر نگراں وزیر اعظم کا افسران اور اسٹاف سے تعارف بھی کرایا گیا جس کے بعد نگراں وزیر اعظم نے باضابطہ ذمہ داریاں سنبھال لیں۔

حلف برداری کے بعد نگراں وزیر اعظم نے کہا کہ انشاء اللہ کابینہ بھی جلد حلف اٹھائے گی، نگران کابینہ مختصر ہوگی، ہمیں آئین کے مطابق الیکشن کمیشن کے کام میں سہولت فراہم کرنا ہے، جس کام کے لیے آئے ہیں اپنی وہ ذمہ داری پوری کریں گے، انتخابات بروقت اور شفاف ہوں گے۔

وزیر اعظم ہاؤس میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے پر وزیر اعظم کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد نے نگراں وزیراعظم کو بریفنگ دی، اس موقع پر فواد حسن فواد نے نگراں وزیر اعظم کو اپنی خدمات سے سبکدوش کرنے کی درخواست کی، نگراں وزیراعظم نے فواد حسن فواد کو خدمات جاری رکھنے کی پیشکش کی تاہم پرزور اصرار پر نگران وزیراعظم نے سہیل عامر کو سیکرٹری برائے وزیراعظم جب کہ فواد حسن فواد کو ڈی جی سول سروس اکیڈمی لاہور اور ابو عاکف کو سیکرٹری کیبنٹ مقرر کردیا۔

واضح رہے کہ پاکستان کی تاریخ میں دوسری حکومت اپنی 5 سالہ آئینی مدت پوری کرنے کے بعد گزشتہ رات ختم ہوگئی تھی جس کے ساتھ ہی قومی وصوبائی اسمبلیاں اور وفاقی کابینہ بھی تحلیل ہوگئی ہیں۔