وزیراعلیٰ سندھ نے سبزیوں کی قیمتوں میں اضافےکا نوٹس لے لیا

کراچی:وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ٹماٹر ، پیاز اور دیگر سبزیوں کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے محکمہ زراعت کو ہدایت کی کہ وہ مداخلت کرتے ہوئے تھوک فروش کے کردار کو کم کریں اور قیمتوں کو کنٹرول کیاجائے۔

وزیرا علیٰ ہاؤس سے جاری ہونے والے ایک بیان میں وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ ٹماٹر کی قیمتیں 250روپے فی کلوگرا م تک پہنچ چکی ہے اور یہ غریب افراد کی دسترس سے باہر ہے۔

انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں یہ ذخیرہ اندوزوں کی جانب سے مصنوعی طور پر قیمتیں بڑھائی گئی ہیں۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے صوبائی وزیر زراعت اور داخلہ سہیل انور سیال کو ہدایت کی کہ وہ ذاتی طورپر اس معاملے کو دیکھیں اور سبزی مارکیٹ میں مداخلت کریں جہاں تھوک فروش نے اپنے منافع کی خاطر قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کیاہواہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹھٹھہ اور سجاول اضلاع میں ٹماٹر کی فصل جلد تیار ہوجاتی ہے لہٰذا ٹھٹھہ اور سجاول سے کراچی کی مارکیٹ میں ٹماٹر لانے کے ضروری انتظامات کئے جائیں اور اگر ہوسکتا ہے کہ تھوک فروش بھی ٹماٹر کی فصل ٹھٹھہ اور سجاول کی اضلاع سے خرید کررہے ہیں مگر اسے لازمی طورپر روکنا ہے۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے محکمہ زراعت پر یہ بھی زور دیا کہ وہ دیگر سبزیوں کی قیمتوں کو بھی چیک کرنے کے حوالے سے ضروری اقدامات اٹھائیں کیونکہ سبزیاں غریب افراد کی خوراک کا واحد ذریعہ ہیں۔انہوں نے کمشنروں ،ڈپٹی کمشنروں اور مارکیٹ کمیٹیوں کو بھی ہدایت جاری کی کہ وہ مصنوعی طورپر قیمتوں میں اضافے کو کنٹرول کرنے کے حوالے سے اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے ذخیرہ اندوزوں جنہوں نے ٹماٹروں اور سبزیوں کی قیمتوں میں مصنوعی طورپر اضافہ کیاہواہے کو گرفتار کرنے کا حکم دیا۔