نوازشریف نے پاناما کیس فیصلے کے خلاف نظرثانی اپیل دائرکردی

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نوازشریف نے پاناما کیس سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے پر نظر ثانی کی اپیل دائر کردی ہے۔

نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث کی جانب سے سپریم کورٹ میں دائر 48 صفحات پر مشتمل درخواست میں کہا گیا ہے کہ پاناما کیس کا فیصلہ قانون کے خلاف اور حقائق کے منافی ہے، عدالت عظمیٰ نے اپنے فیصلے میں حقائق کو مدنظر نہیں رکھا عوامی نمائندے ایکٹ کے تحت نواز شریف کو نا اہل قرار دے کر سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کے اختیارات استعمال کیے ، لہذٰا سپریم کورٹ کے فاضل ججز پر مشتمل بینچ کے نوازشریف کو نااہل اور ان کے خلاف نیب میں ریفرنسز دائر کرنے کے حکم کو کالعدم قرار دیا جائے۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ پاناما کیس میں نوازشریف کے خلاف شیخ رشید، عمران خان اور جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کی درخواستوں پر الگ الگ نظر ثانی کی جائے۔

واضح رہے کہ 28 جولائی کو سپریم کورٹ نے پاناما کیس کا فیصلہ دیتے ہوئے نوازشریف کو ان کے منصب سے نااہل جب کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار سمیت ان کے خاندان کے افراد کے خلاف نیب میں ریفرنس دائر کرنے کا حکم دیا تھا جسے باقاعدہ طور پر چیلنج کردیا گیا ہے۔