سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کو 10برس بیت گئے

لاہور: سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کو آج 10برس مکمل ہوگئے۔

فروری 18، 2007 کو ہندو انتہا پسندوں نے لاہور اور دہلی کے درمیان چلنے والی سمجھوتہ ایکسپریس پر بم حملہ کرنے کے بعد آگ لگا دی تھی جس کے نتیجے میں 40 سے زیادہ پاکستانی مسافرزندہ جل گئے تھے۔ سابق بھارتی وزیر داخلہ سشیل کمار شندے نے بھارتیہ جنتا پارٹی کو بم دھماکے کا ذمہ دار قرار دیا۔

تحقیقات ہوئی تو اس گھنائونی سازش میں حصہ لینے والے بھارتی فوج کے کئی چہرے بے نقاب ہوئے۔ تحقیقات کے بعد اس وقت کے حاضر سروس بھارتی کرنل پروہت، میجر اپادھیا، انتہا پسند ہندو رہنما سوامی آسیم آنند اور کمل چوہان دھماکے میں ملوث پائے گئے۔

مرکزی ملزم آسیم آنند نے اعتراف جرم بھی کیا کہ بھارتی فوج کی مدد سے یہ درندگی آر ایس ایس جیسی انتہا پسند تنظیم اور تنگ نظر ہندئوں کی کارستانی تھی ۔بھارت میں 10 برسوں میں3 حکومتیں تبدیل ہوچکی ہیںلیکن انتہا پسند قاتل آج بھی دندناتے پھرتے ہیں۔