واٹربورڈ تباہ ہو گیا: فاروق،آپ نے ہی لوگ بھرتی کئے تھے:مراد

کراچی: ایک چھت تلے سارے سیاستدان ملیں اور تصادم نہ ہو، ایسا نہیں ہو سکتا۔ جامعہ کراچی میں منعقدہ سیمینار میں سندھ کے وڈے سائیں سمیت متحدہ پاکستان اور پی ایس پی کے سربراہان بھی شریک ہوئے۔

مصطفیٰ کمال نے گڈگورننس میں چین کی مثال دی تو مراد علی شاہ نے بھی ادھار نہ رکھا، بولے چین سے زیادہ مرکزیت پر مبنی سسٹم کسی ملک میں موجود نہیں، آپ نے یہاں بیٹھ کر چین کی مثال دے دی لیکن اختیارات کی تقسیم کا ہم سے بڑا چیمپئن کوئی نہیں۔

واٹر بورڈ کی حالت زار پر بولنا فاروق ستار کو مہنگا پڑ گیا۔ سائیں نے انہیں بھی نہ بخشا، کہنے لگے، فاروق بھائی واٹر بورڈ کا آپ نے ذکر کیا تھا، واٹر بورڈ میں دس ہزار افراد بھی تو آپ نے بھرتی کر دئیے تھے، جنہوں نے واٹر بورڈ کو بٹھا دیا تھا۔

مراد علی شاہ کا مزید کہنا تھا کہ ہم سیاست کو خراب چیز سمجھتے ہیں، پڑھ لکھ کر آدمی تعلیم یافتہ تو ہو سکتا ہے مگر قابل نہیں۔ انہوں نے کہا کہ گریجوایشن کی شرط نے اسمبلیوں کا بیڑہ غرق کر دیا ہے۔

تقریب کی ایک اور خاص بات پی ایس پی کے سربراہ مصطفیٰ کمال اور ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ داکٹر فاروق ستار کا ساتھ ساتھ بیٹھنا اور ایک دوسرے سے مسکراہٹوں کا تبادلہ کرتے ہوئے ہاتھ ملانا بھی تھی۔