فارو ق ستار نے حکومت کو 11مطالبات پیش کردیے

کراچی:متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کنونشن میں11 مطالبات پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر سندھ میں بہتری کی صورتحال پیدا کرنا مقصود ہے اور حقداروں کو حق دینا ہے تو پھر احساس محرومی کے خاتمے اورناانصافیوں کے ازالے کے لیے ہمارے مطالبات منظور کیے جائیں،فاروق ستار کی جانب سے پیش کردہ مطالبات میں کہا کہ بے قصور پْر امن سیاسی کارکنوں کے خلاف بلاجواز گرفتاریوں کا سلسلہ بند کیا جائے۔لاپتہ کارکنان کوایک ایک کرکے ماورائے عدالت قتل کرنے کے بجائے 130لاپتہ کارکنان کوبازیاب کرایاجائے. یہ جن کی بھی تحویل میں ہیں انھیں منظر عام پرلایاجائے،ہمارے ساتھی ایک ایک 2,2سال،6،6ماہ سے لاپتہ ہیں جوسوالیہ نشان ہے۔ماورائے عدالت قتل کیے گئے کارکنوں کے قتل کی جوڈیشل انکورائری کرائی جائے اورجنھوں نے یہ قتل کیے ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جائے، بے گناہ سیاسی رہنما وکارکنان جن میں مئیرکراچی وسیم اختر،اراکین رابطہ کمیٹی عبدالرؤف صدیقی، کنور نوید جمیل، شاہد پاشا، قمرمنصور،گلفرازخان خٹک،ایم پی اے شیراز وحید، اور ان کیساتھ ساتھ جتنے اسیرہیں سب کو رہا کیا جائے۔