روس، ممکنہ امریکی ایٹمی حملے کیخلاف زیرزمین پناہ گاہ تیار

لندن / ماسکو: برطانوی پریس نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ روس نے امریکا کی طرف سے ممکنہ جوہری حملے کا مقابلہ کرنے کیلیے بعض تدابیر اختیار کی ہیں۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق روسی صدر ولادی میر پوتن نے ممکنہ ایٹمی جنگ کا مقابلہ کرنے کیلیے 12ملین افراد کے لیے ایک زیر زمین پناہ گاہ تعمیر کروائی ہے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل روسی صدر ولادیمیر پوتن نے روس اور امریکا کے درمیان پلوٹونیم کو ناکارہ بنانے کے معاہدے کو ملتوی کرنے پر مبنی ایک قرار داد پر دستخط کیے ہیں۔

دریں اثنا گزشتہ روز روسی دارالحکومت ماسکو میں ایوان زیریں کے نو منتخب ارکان اسمبلی کا افتتاحی سیشن ہوا‘ اس افتتاحی سیشن سے صدر پوتن نے خطاب کیا۔