سندھ ہائیکورٹ؛ ایس ایچ او گلشن معمار کے وارنٹ گرفتاری جاری

کراچی: سندھ ہائی کورٹ نے لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق عدالتی حکم پر عمل نہ کرنے پر ایس ایچ او گلشن معمار کے وارنت گرفتاری جاری کردیئے۔

سندھ ہائی کورٹ کے دو رکنی بینچ نے 30 سے زائد شہریوں کی گمشدگی پر درخواست کی سماعت کی۔ درخواست گزار نے عدالت میں استدعا کی کہ سید محمد زیدی اور بلال طارق گزشتہ ڈیڑھ برس سے لاپتہ ہیں اور عدالتی احکامات کے باوجود جے آئی ٹی نہیں بنائی جارہی۔ جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ شہری بازیاب نہ کرانے اور عدالتی احکامات پر عملدرآمد نہ کرنے پر متعلقہ ایس ایچ او کے خلاف کارروائی کا حکم دیں گے۔

عدالت عالیہ نے ایس ایچ او گلشن معمار کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے جبکہ ایس ایس پی کراچی غربی کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے مقدمے کی سماعت ملتوی کردی۔