ہریانہ میں عید قرباں کے موقع پر گائے ذبح کرنے پر پابندی عائد

ہریانہ: بھارت میں مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ کوئی نئی بات نہیں اور گزشتہ کئی ماہ سے گائے کا گوشت کھانے کے الزام میں کئی مسلمانوں پر نہ صرف بہیمانہ تشدد کیا گیا بلکہ بعض کو موت کے گھاٹ بھی اتار دیا گیا جب کہ اب ریاست ہریانہ میں عیدالاضحیٰ کے موقع پر گائے ذبح کرنے پر پابندی لگادی گئی ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق بھارتی ریاست ہریانہ کے مسلم اکثریتی علاقے میوات کی مقامی پنچایت میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ عیدالاضحیٰ کے موقع پر مسلمانوں کو گائے کی قربانی نہیں کرنے دی جائے گی۔ ریاست ہریانہ میں پہلے سے ہی گائے کا گوشت رکھنے، کھانے اور اس کا کاروبار کرنے پر پابندی عائد ہے اور گائے ذبح کرنے پر 3 سے 10 برس تک قید کی سزا کا قانون ہے جب کہ ایک لاکھ روپے کے جرمانے کی تجویز بھی زیر غور ہے۔