رینجرز نے فاروق ستار کو حراست میں لے لیا

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے رہنماء ڈاکٹر فاروق ستار اور خواجہ اظہار الحسن نجی ٹی وی اے آر وائی پر حملہ کے بعد اپنا موقف پیش کرنے کیلئے کراچی پریس کلب پہنچے تھے۔ اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں کی بڑی تعداد وہاں موجود تھی۔ تاہم رینجرز کی بھاری نفری وہاں پہنچ گئی اور متحدہ رہنماؤں کو بات چیت کرنے سے روک دیا۔

ذرائع کے مطابق رینجرز اہلکاروں نے فاروق ستار اور خواجہ اظہار الحسن کو ساتھ چلنے کو کہا لیکن متحدہ رہنماؤں کا کہنا تھا کہ انھیں چند منٹ میڈیا سے بات کرنے دی جائے تاہم انھیں اس کی اجازت نہیں دی اور حراست میں لے لیا گیا۔ اس موقع پر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ اگر ڈی جی رینجرز نے انھیں بلایا ہے تو وہ اپنی گاڑی میں ان کے پاس جائیں گے، جس پر رینجرز اہلکاروں کا کہنا تھا کہ وہ گاڑی میں ان کے ساتھ بیٹھیں گے۔ ذرائع کے مطابق متحدہ کے دونوں رہنماؤں کو رینجرز ہیڈ کوارٹرز منتقل کیا جا رہا ہے۔