دوا ساز کمپنیوں کی مختلف امراض کی ادویات مہنگی کرنیکی سفارش

لاہور: حکومت کی عوام پر بڑے وار کی تیاری ۔ ادویات 2 سے آٹھ گنا مہنگی ہونے کا امکان۔ ڈرگ پرائسنگ کمیٹی کا اجلاس 30اگست کو طلب۔ ذرائع کے مطابق مہنگی ہونے والی ادویات میں امراض قلب، جگر، گردے اور پیٹ کے امراض سمیت متعدد بیماریوں کی 507 ادویات شامل ہیں۔ دمے کے مریضوں کے ان ہیلر، انجیکشنز، سیرپ اور اینٹی بایوٹکس بھی مہنگی ہونے کا امکان ہے۔ ادویہ ساز کمپنیوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ مارفین انجکشن 2 ہزار سے بڑھا کر 4 ہزار روپے۔ اینٹی فنگل دوائی واریکون کی قیمت 400 سے بڑھا کر 1 ہزار روپے، ٹانکوں میں استعمال ہونے والے دھاگوں کی قیمت 6 ہزار سے بڑھا کر 40 ہزار روپے تک جبکہ بے ہوشی کے انجکشن پینٹوتھل کی قیمت 1700 روپے سے بڑھا کر 3658 روپے مقرر کی جائے۔