کون بیوقوف اورجاہل ہوگا جو چوہدری نثارکے پاس سفارش لے کرجائے گا، اعتزازاحسن

لاہور: سینیٹ میں قائد حزب اختلاف بیرسٹراعتزاز احسن کہتے ہیں کہ وہ ایان علی اور ڈاکٹر عاصم سے متعلق چوہدری نثار کے بیان کی تردید کرتے ہیں اوراگر کسی نے ان سے سفارش کی ہے تو وہ اس کا نام بتائیں۔

لاہورمیں میڈیا سے بات کرتے ہوئے اعتزازاحسن نے کہا کہ موجودہ حکومت کے بارے میں ان کی رائے بڑی واضح ہے کہ یہ حکومت ناکام ہے، شریف برادران اوران کے حواری اربوں کے ٹیکے لگاتے ہیں، شریف برادران نے دکانیں کھولی ہوئی ہیں، ترقیاتی منصوبوں میں کمیشن بنایا جا رہا ہے، شریف برادران منصوبوں میں کمیشن کھا رہے ہیں، 230 ارب روپے سے اورنج لائن بنائی جارہی ہے، میٹروبس اوراورنج ٹرین کے نام پربہت بڑا ڈاکہ ڈالا گیاہے۔

پیپلز پارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت کے نوٹی فکیشن کے بغیرکوئی نیا قانون نہیں بن سکتا، حکومت نہیں چاہتی کہ احتساب ہو، نوازشریف کا خود اوراپنے بچوں کو احتساب کے لئے پیش کرنا جھوٹ ہے، پاناما لیکس سے حکومت بھاگ نہیں سکے گی، پاناما لیکس گھنٹی کی طرح ان کے گلے میں بندھی رہے گی، ٹی اوآرپرکوئی نتیجہ نہیں نکلے گا اورتحریک چلے گی۔

بیرسٹراعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ وہ چوہدری نثارکو سنجیدگی سے نہیں لیتے، وہ ایان علی اور ڈاکٹر عاصم سے متعلق چوہدری نثار کے بیان کی تردید کرتے ہیں، چوہدری نثار کی پیپلز پارٹی سےدشمنی ڈھکی چھپی نہیں، کون بیوقوف ہوگا جو چوہدری نثار کے پاس پیپلز پارٹی کی سفارش لے کر جائے گا جب کہ انہوں نے یہ بات خود سے بنائی ہے۔

لاہورمیں بچوں کے اغوا کے حوالے سے پیپلز پارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ شہر میں خوف کی فضا پھیلی ہوئی ہے، شہری بچوں کے اغوا سے پریشان ہیں ، صرف لاہوری نہیں اپنے بچوں کے معاملے میں کوئی بھی دلیر نہیں ہوتا۔