اویس شاہ لاپتا کیس میں اہم پیشرفت

کراچی: چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کے مغوی صاحبزادے اویس شاہ کے کیس میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے جس میں مغوی کا فون 72 گھنٹوں بعد آن ہوا جسے سیکیورٹی اداروں نے ٹریس کرلیا۔

چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ جسٹس سجاد علی شاہ کے صاحبزادے اویس شاہ کے کیس میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اویس شاہ کا فون اغوا ہونے کے بعد 72 گھنٹے بعد آن ہوا جسے سیکیورٹی اداروں نے ٹریس کیا تو فون کی لوکیشن خیبرایجنسی ظاہر ہوئی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ مغوی اویس شاہ کا فون صرف 6 منٹ تک آن رہا جس کے بعد اسے دوبارہ بند کردیا گیا جب کہ فون خیبرایجنسی کے علاقے میں آن ہوا۔ تفتیشی حکام کا کہنا ہےکہ مغوی کا فون آن کرنا تفتیشی اداروں کو گمراہ کرنے کی سازش بھی ہوسکتی ہے تاہم اس حوالے سے مزید معلومات اکٹھا کی جارہی ہیں۔
واضح رہے کہ اویس شاہ کو 20 جون کی دوپہر کراچی کے علاقے کلفٹن میں شاپنگ مال کے باہر سے اغوا کیا گیا جس میں 4 مسلح افراد نے اویس شاہ کو اسلحہ کے زورپر یرغمال بنایا اور گاڑی میں ساتھ لے گئے جب کہ عینی شاہدین کے مطابق گاڑی پر سبز رنگ کی نمبر پلیٹ لگی تھی۔ وزیراعظم نے اویس شاہ کے اغوا کا نوٹس لیا ہے جب کہ اس حوالے سے چیف جسٹس پاکستان نے بھی سندھ حکومت کو مغوی کی جلد بازیابی کے لیے اقدامات اٹھانے کا حکم دیا ہے۔