میری توانائیاں اور لہو کا ایک ایک قطرہ وطن کی مٹی کے لیے وقف ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ میرے جسم و جان کی ساری توانائیاں پاکستان کی مٹی کے لیے وقف ہیں جس نے مجھے عزت سے نوازا اور میرے لہو کی ایک ایک بوند اور ایک ایک سانس وطن کی اس مٹی کا قرض ادا کرتی رہے گی۔
وزیراعظم نوازشریف نے لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن سے بذریعہ ویڈیو لنک وفاقی کابینہ کے بجٹ اجلاس کی صدارت کی جس میں وفاقی کابینہ نے وفاقی بجٹ 17-2016 کی بجٹ تجاویز کی منظوری دی جب کہ اس موقع پر کابینہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ صحت کے مسائل کی وجہ سے اجلاس میں شرکت نہیں کرسکا تاہم زندگی میں بارہا ایسے تجربوں سے گزرا ہوں لیکن عوام کی دعاؤں نے میری مشکل آسان کی اور کامیابیاں دیں، آج بھی قوم کی دعائیں میرا سب سے بڑا سہارا ہیں، میں ماؤں، بہنوں، بیٹیوں، بزرگوں اور اپنے نوجوانوں کا شکر گزار ہوں جو خلوص اور محبت کا جذبہ لیے میرے ساتھ کھڑے ہیں۔
وزیراعظم نے کہا کہ ملک کی سیاسی جماعتوں کے قائدین کا بھی شکر گزار ہوں جنہوں نے میری صحت و سلامتی کےلیے نیک خواہشات کا اظہار کیا، مسلم لیگ (ن) کے رفقاء اور کارکنان کا بھی شکر گزار ہوں جو مسلسل میرے لیے دعاگو ہیں، اس موقع پر میڈیا کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں جس نے اپنی دینی تہذیب اور اخلاقی اقدار کا مظاہرہ کرتے ہوئے میرے کامیاب آپریشن اور صحت کے لیے دعائیں کی۔
وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت نے اپنا چوتھا بجٹ تیار کرلیا ہے ،3 سال بعد محنت کا ثمر حاصل کررہے ہیں، ہم نے حکومت سنبھالی تو معیشت انتہائی کمزور تھی اور سرمایہ کاری میں مسلسل کمی آرہی تھی لیکن ہماری پالیسیوں سے سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھا ہے، ہم نے معاشی چیلنجز سے نبردآزما ہونے کے لیے پالیسیاں بنائیں، ہماری پالیسیاں پاکستان میں امن لائی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ توانائی بحران سے نمٹنے کےلیے جامع منصوبہ بندی کی، آج مالی خسارہ 4.3 فیصد کم ہوا ہے، پاکستان کے تمام معاشی اعشاریوں میں بہتری آئی ہے، ٹیکس وصولیوں میں 2013 کی نسبت اضافہ ہوا ہے جب کہ زر مبادلہ کے ذخائر 21.06 ارب ڈالر تک پہنچ گئے ہیں۔
وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میرے جسم و جان کی ساری توانائیاں پاکستان کی مٹی کے لیے وقف ہیں جس نے مجھے عزت سے نوازا، لہو کی ایک ایک بوند اور ایک ایک سانس وطن کی اس مٹی کا قرض ادا کرتی رہے گی، میری آنکھیں ایسے پاکستان کا منظر دیکھ رہی ہیں جو دہشت گردی، غربت، جہالت پسماندگی اور اندھیروں سے پاک ہوگا اور جسے دنیا رشک کی نگاہ سے دیکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ اپنی کابینہ کے ساتھیوں کی دعاؤں اور نیک خواہشات پر ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں جب کہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو نہ صرف مالیاتی و معاشی امور اور بہت سی دوسری ذمہ داریوں کو قابلیت اور مہارت سے انجام دینے کے لیے انتھک کاوشوں پر شاباش دیتا ہوں۔