لگتا ہے حکومتی کشتی لیک ہوکر ہچکولے کھارہی ہے، بلاول بھٹو زرداری

باغ: پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم نواز شریف سے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کے الیکشن تاریخی اور اہم ہیں اگر یہاں سے (ن) لیگ جیت گئی تو سمجھوں گا کہ نواز شریف اور مودی کی دوستی کی حمایت کی گئی۔

آزاد کشمیر کے شہر باغ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹوزرداری کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس میں وزیراعظم کے خاندان کا نام سامنے آنے کے بعد وزیراعظم کے بیانات نے انہیں مشکل میں ڈال دیا ہے ہم پاناما لیکس کے معاملے کی شفاف تحقیقات چاہتے ہیں لیکن وزیراعظم نہ اسمبلی میں آرہے ہیں اور نہ ہی اپوزیشن کے مطالبات مان رہے ہیں۔ مشترکہ اپوزیشن نے پاناما لیکس کے حوالے سے چند سوالات کئے ہیں لیکن انہیں بھی جواب نہیں دیا جارہا، پاناما لیکس پر وزیراعظم کو جواب دینا ہی پڑے گا لیکن لگتا ہے کہ حکومتی کشتی لیک ہوکرہچکولے کھارہی ہے۔

چئیرمین پیپلز پارٹی نے وزیراعظم نوازشریف کومخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کوٹلی میں وہی الفاظ دہرائے تھے جو آپ نے پیپلزپارٹی کے منتخب وزیراعظم کے لئے کہے تھے، آپ نے پیپلز پارٹی کے منتخب وزیراعظم سے استعفے کا مطالبہ کیا تھا آج ہم آپ سے استعفے کا مطالبہ کر رہے ہیں یا آپ کہیں کہ اس وقت آپ غلط تھے یا میرا مطالبہ مان لیں اورگھر چلے جائیں۔